127

مودی حکومت کی مقبوضہ وادی میں مکمل شٹ ڈاؤن کےذریعے تباہی چھپانےکی کوشش

(ویب ڈیسک) ہیومن رائٹس واچ نےاپنی رپورٹ میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کی مذمت کرتےہوئےکہاکہ مقبوضہ کشمیر میں انٹرنیٹ،موبائل فون سروس تاحال معطل ہے۔

تفصیلات کیمطابق ہیومن رائٹس واچ کیطرف سےجاری کردہ سالانہ رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ بھارتی حکومت نے کشمیر میں مکمل شٹ ڈاؤن کے ذریعے تباہی کو چھپانے کی کوشش کی، بھارت نےمقبوضہ کشمیر میں سخت محاصرہ کرتےہوئے اضافی فوجی تعینات کیےہوئےہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ سابق وزرائے اعلیٰ، سیاسی رہنماؤں ، کارکنوں ، وکلا اور صحافیوں کو بغیر الزام کے نظربند کیاگیاہے،فوجی محاصرے کے باعث کشمیری بدستور مشکلات کا شکار ہیں، کشمیریوں نے انٹرنیٹ کی جزوی بحالی کے بھارتی دعوے کو سختی سے مستردکردیاہے۔

واضح رہےکہ مقبوضہ وادی میں 4 ماہ سے زائد عرصے سے کرفیو نافذ ہے جس کے باعث اشیائے خوردونوش کی شدید قلت ہے جب کہ مریضوں کے لیے ادویات بھی ناپید ہوچکی ہیں، ریاستی جبر و تشدد کے نتیجے میں متعدد کشمیری شہید اور زخمی ہوچکے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں