64

90 لوگ مر گئے آپ نے کیا کیا، آپ کو استعفیٰ دے دینا چاہیے تھا،چیف جسٹس کاشیخ رشیدپراظہاربرہمی

اسلام آباد،(بےلاگ نیوز) چیف جسٹس پاکستان نے ریلویز خسارہ کیس میں شیخ رشید پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا وزیر صاحب بتائیں کیا کر رہے ہیں، آپ کا کچا چھٹا ہمارے سامنے ہیں، 90 لوگ مر گئے آپ نے کیا کیا، آپ کو استعفیٰ دے دینا چاہیے تھا۔

 چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے ریلوے خسارہ کیس کی سماعت کی،سماعت کے دوران شیخ رشید نے عدالت سے وزارت منصوبہ بندی کی شکایت کر دی اور کہا وزارت منصوبہ بندی بار بار چکر لگانے کے باوجود تعاون نہیں کر رہی۔ عدالت عظمیٰ نے وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کو آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا حکم دے دیا۔

چیف جسٹس گلزارا حمد نے کہا کیماڑی سے پشاور تک پوری ریلوے میں لوٹ مار مچی ہوئی ہے، آپ کی مرضی سے ریلویز کی زمینوں پر قبضہ ہوا، آپ کی وزارت میں غیر قانونی بھرتیوں کا سلسلہ جاری ہے، آپ کی انتظامیہ سے ریلوے نہیں چلے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں