45

ناسا نےایک نئی قابل رہائش دنیادریافت کرلی

(ویب ڈیسک)امریکی خلائی ادارے ناسا نے کہا ہے کہ اس کے سیارچے (سیٹلائٹ) ٹرانزیٹنگ ایگزوپلانٹ سروے سیٹلائٹ یعنی ٹی ای ایس ایس نے ایک نئی دنیا دریافت کی ہے جو کہ قابل  رہائش ہو سکتی ہے۔

امریکی ریاست ہوائی کے دارلحکومت ہونولولو میں امریکن ایسٹرونومیکل سوسائٹی کی میٹنگ کے دوران ناسا نے نئی زمین کی دریافت کا اعلان کیا اور بتایا کہ اس کا نام “ٹی او آئی 700 ڈی “رکھا ہے اور یہ ہماری زمین سے قریب ترین یعنی صرف 100 نوری سال کے فاصلے پر ہے۔

ناسا کے فلکی طبیعیات(ایسٹروفزکس) ڈویژن کے ڈائریکٹر پال ہیرٹز کا کہنا ہے کہ سیٹ لائٹ “ٹی ای ایس ایس “کو بنانے اور لانچ کرنے کا مقصد ہی ایسے سیاروں کی تلاش کرنا ہے جو کہ اپنے قریب ترین ستاروں کےگرد چکر لگا رہے ہیں۔

یونیورسٹی آف شکاگو کی طالبہ امیلی گلبرٹ کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے ستاروں کے پیرامیٹرز کو درست کر دیا تو ستاروں کا حجم کم ہو ا اور سب سے بیرونی سیارہ زمین کی جسامت کے برابر اور رہائش کے قابل زون میں موجود تھا۔اس تحقیق کی بعد ازاں اسپٹزر اسپیس ٹیلی اسکوپ نے بھی تصدیق کر دی۔

یاد رہے کہ اسی طرح کے کچھ سیاروں کی دریافت اس سے قبل کیپلر اسپیس ٹیلی اسکوپ بھی کر چکی ہے لیکن 2018 میں لانچ کی گئی ٹی ای ایس ایس کی جانب یہ پہلی دریافت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں