30

کے پی کےحکومت کاوبائی امراض سے متعلق قانون سازی کرنے کافیصلہ

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک )خیبرپختونخوا حکومت نے وبائی امراض سے متعلق قانون سازی کرنے کافیصلہ کرلیاہے،ای پیڈمک کنٹرول اینڈ ایمرجنسی ریلیف کے نام سے قانونی مسودہ تیارکرلیاگیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق مسودہ میں کہاگیا ہے کہ وبائی مرض میں مبتلا کسی شخص کو قرنطینہ مرکز میں رکھا جا سکتا ہے ،قرنطینہ سنٹر سے بھاگنے والے شخص کو 50 ہزار روپے جرمانہ کیاجائے گا،وبائی مرض میں مبتلا شخص حکومت کو اپنی ہسٹری بتانے کا پابند ہو گا۔

مسودے میں مزیدکہاگیاہے کہ حکومت وبا کے وقت ضرورت پڑنے پر تعلیمی اداروں اوربازاروں کو بند سکتی ہے ،انتظامیہ وبا کے کسی بھی علاقے میں لاک ڈاﺅن کرکے معمولا ت زندگی روک سکتی ہے ،محکمہ صحت وبائی امراض کے علاقوں سے متعلق ڈی سی کو آگاہ کرے گا،حکومت کسی بھی علاقے یا محلے کو سیل کرکے وہاں سکیورٹی تعینات کرسکتی ہے ۔

مسودے میں مزید کہاگیا ہے کہ وبا سے متاثرہ علاقوں میں مالک مکان کرایہ دار کو نہیں نکال سکتا ،چھوٹے مکانات کی نشاندہی کربعد ان کے پانی کے بلوں کو معاف کیا جاسکتا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں