223

یہ خاموشی پورے خطے کو خطرات سے دوچار کرسکتی ہے:وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی

اسلام آباد(بےلاگ نیوز) شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت کے مقبوضہ کشمیر میں 5 اگست کے اقدامات کا کوئی ساتھ نہیں دے رہا، کنٹرول لائن پر بھارتی فوج کی غیرمعمولی نقل و حرکت خطرناک ہے، امن کو تہہ وبالا کرنے کا منصوبہ دکھائی دے رہا ہے۔مودی سرکار کے اقدامات سے بھارت میں کشیدگی عروج پر ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا متنازعہ ترمیمی شہریت ایکٹ کیخلاف پوری دنیا میں بھارتی احتجاج کر رہے ہیں، سرحد پر لگی باڑ کئی جگہ سے کاٹی گئی اوربھارتی فوج کی غیر معمولی نقل و حرکت دیکھنے میں آ رہی ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا بھارت نے جنوری 2019 سے اب تک 3 ہزار سے زیادہ بار ایل او سی کی خلاف ورزیاں کیں، ایل او سی کی خلاف ورزیوں میں 300 سے زیادہ لوگوں کو نشانہ بنایا جاچکاہے جبکہ امن و استحکام کا تحفظ سلامتی کونسل کے چارٹرمیں شامل ہے، ساری صورتحال کے پیچھے ہمیں سوچا سمجھا بھارتی منصوبہ دکھائی دے رہا ہے، بھارت میں جاری احتجاج کو چھپانا ان کی خواہش کے باوجود ممکن نہیں۔

شاہ محمود قریشی کامزید کہنا تھا کہ دنیا پوری طرح باخبر ہے کہ مودی سرکار کیا کر رہی ہے، خاموش رہنے والوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ یہ خاموشی خطرناک ہے، یہ خاموشی پورے خطے کو خطرات سے دوچار کرسکتی ہے، جب 2 ایٹمی طاقتیں آمنے سامنے ہوں تو بات خطے تک محدود نہیں رہے گی، بات بہت دور چلی جائے گی اور اس کے اثرات عالمی سطح پر ہوں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں