210

دشمن کے کسی بھی مس ایڈوینچرکے لیےمکمل تیار ہیں،آرمی چیف

چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کا ایل او سی دورہ

اسلام آباد (بے لاگ نیوز)چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کا ایل او سی اور سی ایم ایچ مظفرآباد کا دورہ, کیا،اور بھارتی فورسز کی گولہ باری سے زخمی ہونے والے شہریوں کی عیادت بھی کی ،جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ہماری امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے, کشمیر پر کسی بھی قیمت پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا, ہم مادر وطن کے دفاع اور دشمن کے کسی بھی مس ایڈوینچر,جارحیت کے لیے مکمل تیار ہیں

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ لائن آف کنٹرول (ایل او سی ) پر بھارت کی جانب سے  براہموس میزائل اور اسپائیک اینٹی ٹینک میزائلوں کی تنصیب کی اطلاع ہے، یہ سارے عوامل امن و امان کے لیے خطرہ ہیں۔

دوسری جانب جیو نیوز کے پروگرام ‘جیو پاکستان’ میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ  نے کہاکہ دنیا پوری طرح باخبر ہے کہ مودی سرکار کیا کر رہی ہے، خاموش رہنے والوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ جب 2 ایٹمی طاقتیں آمنے سامنے ہوں تو بات خطے تک محدود نہیں رہے گی بکہ بہت دور چلی جائے گی اور اس کے اثرات عالمی سطح پر ہوں گے۔شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ  بھارتی حکومت اپنے ملک میں جاری احتجاج سے توجہ ہٹانے کے لیے ایل او سی پر شرارت کر سکتی ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ہمارے انٹیلی جنس اداروں نے ایل او سی پر نئی پیش رفت کو رپورٹ کیا ہے، ایل او سی پر براہموس میزائل اور اسپائیک اینٹی ٹینک میزائلوں کی تنصیب بھی رپورٹ ہوئی  ہے، یہ سارے عوامل امن و امان کے لیے خطرہ دکھائی دے رہے ہیں۔

دو روز قبل وزیراعظم عمران خان نے بھی بھارت کی حکمران جماعت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا کہ شہریت کے متنازع قانون کے بعد بھارت میں بڑی تحریک کا آغاز ہو چکا ہے۔

سوشل میڈیا پر جاری اپنے بیان میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ گزشتہ پانچ برس سے بھارت ہندو راشٹریا اور ہندو توا بالا دستی کے فسطائی نظریے کی جانب بڑھ رہا ہے۔

عمران خان نے   بین الاقوامی برادری کو انتباہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ بھارت اپنے اندرونی حالات سے توجہ ہٹانے کے لیے جعلی آپریشن کرنا چاہتا ہے اور ہندو قومیت کو پروان چڑھانے کے لیے جنگی جنون میں اضافہ چاہتا ہے۔

وزیراعظم پاکستان کا مزید کہنا تھاکہ بھارت نے ایسا کیا تو پاکستان کے پاس مناسب جواب دینے کے سوا کوئی آپشن نہیں بچے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں