232

حکومت نے آرمی چیف کی توسیع کے حوالے سے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کر دی

حکومت نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے سپریم کورٹ میں نظر ثانی درخواست دائر کر دی۔

اسلام آباد (بے لاگ نیوز)وفاقی حکومت کی جانب سے دائر نظر ثانی کی درخواست میں سپریم کورٹ سے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے گزشتہ ماہ کے فیصلے کو کالعدم قرار دیکر سماعت کے لیے لارجر بینچ تشکیل دینے کی استدعا کی گئی ہے۔

اس کے علاوہ حکومت نے نظر ثانی درخواست میں کہا ہے کہ کیس کی ان کیمرہ سماعت کی جائے۔

قبل ازیں وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے فیصلے میں کئی آئینی نکات کا جائزہ نہیں لیا، بہت سے آئینی معاملات پر نظر ثانی کی ضرورت ہے۔

بیرسٹر فروغ نسیم نے بتایا تھا کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق فیصلے پر نظرثانی درخواست دائر کی جائے گی جس کا مسودہ تیار کر لیا گیا ہے۔

وزیر قانون نے کہا کہ سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی درخواست آج ہی دائر کی جائے گی  اور توسیع سے متعلق سپریم کورٹ کے سارے فیصلے پر نظر ثانی درخواست دائر کریں گے۔

واضح رہے کہ 28 نومبر 2019 کو آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق کیس میں سپریم کورٹ نے حکومت کو 6 ماہ میں قانون سازی کرنے کا حکم دیتے ہوئے چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت میں 6 ماہ کی مشروط توسیع دی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں