237

بھارتی زمین بھارتیوں کیلئےہی تنگ،ہلاکتوں کی تعداد21ہوگئی

(ویب ڈیسک)مودی کا ظلم نہ تھما،بھارت میں شہریت کے متنازع قانون کے خلاف احتجاج کا سلسلہ جاری،بھارتی ریاست اترپردیش میں 21 مظاہرین ہلاک ۔

بھارت میں متنازع شہریت کے قانون کے خلاف 19 روز سےجاری احتجاج اور مظاہروں میں روز بروزتیزی آرہی ہے۔بھارتی ریاست اترپردیش کے مسلم اکثریتی صوبوں میں انٹرنیٹ کی سروس بند کردی گئی ہے جبکہ نماز جمعہ کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے۔

 شمالی ریاست اترپردیش میں اب تک پولیس کی فائرنگ اور تشدد سے 21 مظاہرین ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ ریاستی پولیس کے ترجمان نے بھی گزشتہ ہفتے 19 افراد کی ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔

یوپی پولیس نے مظاہروں میں شریک 6 ہزار سے زائد افراد کو گرفتار کیا جبکہ سوشل میڈیا پر احتجاجی پوسٹ کرنے پر بھی 120 سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا۔

نئی دہلی میں بھی جگہ جگہ احتجاج کیا گیا تاہم جامع مسجد کے باہر بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں سیکڑوں افراد نے شرکت کی۔دہلی میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلبہ و طالبات نے 15 ویں روز بھی مسلسل احتجاج کیا اور نماز جمعہ کے بعد مظاہرین کی بڑی تعداد بینر اور پلے کارڈ اٹھائے باہر نکل آئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں